ChinaDelhi-NCR

آٹو ایکسپومیں چینی کمپنیوں نے بک کرائی20 فیصد جگہ

نئی دہلی، 23 جنوری (ہ س)۔ چین اپنی توسیعی پالیسیوں کو بھارت میں انجام دینے کے لئے آٹوموبائل مارکیٹ میں چھانے کے لئے پوری طرح تیار ہیں۔ اقتصادی سست روی کی وجہ سے جب دنیا بھر کی بڑی آٹو کمپنیاں بھارت کی اس مشہور آٹو ایکسپو میں حصہ نہیں لے رہی ہیں، ایسے میں چین کی کمپنیوں کی طرف سے اس میں 20 فیصد جگہ بک کرانے سے ان کے ارادے صاف ہو جاتے ہیں۔ بتا دیں کہ چینی کمپنیاں اسمارٹ فون کے شعبہمیں پہلے ہی بھارتی مارکیٹ میں چھا چکی ہیں۔
بھارتی آٹوموبائل مینوفیکچررز کے گروپ (سیام) کے ڈپٹی ڈی جی سگتو سین نے جمعرات کے روز بیان جاری کر بتایا کہ چینی آٹو کمپنیاں ایکسپو میں نئی ٹیکنالوجی، الیکٹرک کارس اور کئی دوسرے ماڈل کے ساتھ آ رہی ہے۔ ایکسپو وےنیو میں 20 فیصد (40 ہزار مربع فیٹ میں سے 8 ہزار مربع فیٹ) سے زیادہجگہ چین کی کمپنیوں نے بک کرائے ہیں۔واضح ہو کہ سیام اس ایکسپو سی آئی آئی اور اے سی ایم اے کے ساتھ مل کر منعقد کرتا ہے۔
ہر دو سال پر ہونے والے آٹو ایکسپو میں اس سال بڑی آٹو کمپنیاں بی ایم ڈبلیو، آڈی، جگوار اینڈ لےنڈروور، ہونڈا، ٹویوٹا اور فورڈ حصہ نہیں لے رہی ہیں۔ ایکسپو میں ان کمپنیوں کے بدلے چین کی بڑی آٹو کمپنیاں ایس اے آئی سی (چین کی سب سے بڑی آٹو کمپنی اور ایم جی موٹرز کی مالک)، فاء(ہمیا برینڈ کے ذریعے انٹری)، گریٹ وال (چین کی سب سے بڑی ایس یو وی بنانے والی کمپنی اور بی وائی ڈی (الیکٹرک بسیں اور بےٹری بنانے والی کمپنی) حصہ لے رہی ہیں۔ اس کے علاوہ، چینی کمپنیوں نے الیکٹرک وہیلر گاڑیوں کے لئے بھارت کی چھوٹی آٹو کمپنیوں اور اسٹارٹپس اے ساتھ شراکت داری ہے۔ دہلی سے ملحق گریٹر نوئیڈا میں منعقد ہونے والا آٹو ایکسپو میڈیا کے لئے پانچ فروری کو کھل جائے گا اور اس کے اگلے دن گاڑیوں کے کئی ماڈل لانچ کئے جائیں گے۔ عام لوگوں کے لئے آٹو ایکسپو سات فروری کو کھل جائے گا اور 12 فروری تک چلے گا۔

Show More

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Close